بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

14 ربیع الثانی 1441ھ- 12 دسمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

سمندر کے جانوروں میں صرف مچھلی حلال ہے


سوال

سمندرکے کو ن سے جانور حلال ہیں؟

جواب

جو جانور صرف سمندر ہی میں رہتے ہیں ان میں سے صرف مچھلی حلال ہے، بشرطیکہ وہ از خود مر کر پانی کے اوپر نہ آگئی ہو۔

تحفة الفقهاء (3 / 63):

"أما الذي لايعيش إلا في الماء فكله محرم الأكل إلا السمك خاصةً بجميع أنواعه، سوى الطافي منه؛ فإنه مكروه؛ لقوله عليه السلام: أحلت لنا ميتتان ودمان: السمك والجراد والكبد والطحال، وهذا عندنا".

النتف في الفتاوى للسغدي (1 / 232):

"أما دواب البحر؛ فانها محرمة سوى السمك بأجناسها في قول الفقهاء".

بدائع الصنائع في ترتيب الشرائع (5 / 35):

"فالحيوان في الأصل نوعان: نوع يعيش في البحر، ونوع يعيش في البر، أما الذي يعيش في البحر فجميع ما في البحر من الحيوان محرم الأكل إلا السمك خاصةً؛ فإنه يحل أكله إلا ما طفا منه، وهذا قول أصحابنا - رضي الله عنهم –".

الهداية في شرح بداية المبتدي (4 / 353):

"ولايؤكل من حيوان الماء إلا السمك". فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144010201251

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے