بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 ربیع الثانی 1441ھ- 09 دسمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

بی سی جمع کرنے اور اس کی حفاظت اور تقسیم کی ذمہ داری پر اجرت لینا


سوال

اگر کوئی شخص بیسی کی  جمع داری کے پیسے لیتا ہے،  کیا یہ درست ہے؟ راہ نمائی فرمائیں!

جواب

صورتِ مسئولہ میں اگر مذکورہ شخص کو  تمام شرکاء سے بی سی جمع کرنے میں باقاعدہ عمل کرنا پڑتا ہے، یعنی اسے خود گھر گھر جاکر رقم جمع کرنی ہوتی ہے تو اس صورت میں وہ تمام شرکائے  بی سی کی رضامندی سے متعین کرکے محنتانہ وصول کرسکتاہے،  تاہم اگر تمام شرکاء خود پیسے لاکر اس شخص کے پاس جمع کراتے ہوں تو اس صورت میں اسے محنتانہ وصول کرنے کی شرعاً اجازت نہ ہوگی۔  فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144010200191

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے