بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 ربیع الثانی 1441ھ- 09 دسمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

اونٹ کو نحر کرتے وقت قبلہ رخ کرنا


سوال

اونٹ کو  بوقتِ نحر قبلہ رخ کرنا ضروری ہے؟

جواب

بوقتِ نحر اونٹ  کو قبلہ رُخ کرنے کے بارے میں صریح  جزئیہ تو نہیں ملا، البتہ  دیگر جانوروں پر قیاس کرتےہوئے اس کا بوقتِ  نحر قبلہ رو کرنا (ضروری تو نہیں، البتہ) مستحب ضرور ہے۔

المبسوط للسرخسي (12 / 3):
"وكذلك إن ذبحها متوجهةً لغير القبلة حلت، ولكن يكره ذلك)؛ لأن السنة في الذبح استقبال القبلة، هكذا روى ابن عمر -رضي الله عنهما- أن «النبي صلى الله عليه وسلم استقبل بأضحيته القبلة لما أراد ذبحها» وهكذا نقل عن علي -رضي الله تعالى عنه-، وهذا؛ لأن أهل الجاهلية ربما كانوا يستقبلون بذبائحهم الأصنام، فأمرنا باستقبال القبلة لتعظيم جهة القبلة، ولكن تركه لايفسد الذبيحة بخلاف ترك التسمية؛ لأن في التسمية تعظيم الله تعالى، وذلك فرض. فأما استقبال القبلة لتعظيم الجهة، وذلك مندوب إليه في غير الصلاة".
 فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144004200867

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے