بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 ربیع الثانی 1441ھ- 07 دسمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

آپ ﷺ کے نامِ مبارک کا ذکر کرتے یا سنتے ہوئے انگوٹھا چومنا


سوال

محمد صلی اللہ علیہ وسلم کا نام سنتے وقت یا لیتے وقت انگوٹھے  چومنا کیسا ہے؟

جواب

شریعتِ مقدسہ میں حضورِ اقدس ﷺ کا نامِ مبارک سن کر درود وسلام بھیجنے کا حکم  دیا گیا ہے، آپ ﷺ  کا نامِ مبارک سن کر آپ پر درود اور سلام بھیجنا انتہائی سعادت ، برکت اور ثواب کا باعث ہے، لیکن اس وقت انگوٹھے  چومنے کا عمل کسی صحیح سند یا روایت سے منقول نہیں،  لہٰذا انگوٹھے  چومنے کو سنت یا مستحب سمجھنا غلط  اور بدعت ہے۔فقط واللہ اعلم

مزید تفصیل کے لیے درج ذیل لنک پر جامعہ کا فتوی ملاحظہ کیا جاسکتا ہے :

اذان کے وقت انگوٹھے چومنا


فتوی نمبر : 144010200482

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے