بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

6 شعبان 1441ھ- 31 مارچ 2020 ء

دارالافتاء

 

ہفضہ ، حفصہ نام رکھنا


سوال

ہفضہ نام کا معنی کیا ہے؟  یہ نام ٹھیک ہےکہ نہیں؟

جواب

’’ہفضہ‘‘  لفظ  تو  مستعمل نہیں ہے، اس کے بجائے بچی کا  ”حفصہ“ (حَفْصَهْ) نام رکھ لیا جائے،  اس کے معنی: شیر (یعنی بہادر) کی بچی کے ہیں،  اور "حفصہ" مشہور صحابیہ، رسول اللہ ﷺ کی زوجہ مطہرہ اور حضرت عمر فاروق رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی صاحب زادی کا نام ہے۔ ان کے علاوہ اور بھی اس نام کی متعدد صحابیات تھیں، یہ نام رکھنا  اچھا اور باعثِ برکت  ہے۔

القاموس المحيط (ص: 615):
"الحفص: زبيل من أدم تنقى به الآبار، ج: أحفاص وحفوص. وولد الأسد، وبه كنى النبي صلى الله عليه وسلم عمر بن الخطاب رضي الله تعالى عنه. وحفص بن أبي جبلة، وابن السائب، وابن المغيرة: صحابيون، وبهاء: بنت عمر بن الخطاب أم المؤمنين". 
  فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144107200423

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے