بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 شوال 1441ھ- 01 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

کیا تقسیمِ میراث کے بعد دوبارہ تقسیم ہو سکتی ہے؟


سوال

ایک مرتبہ وراثت ہو جانے کے بعد دوبارہ وراثت کرنا کیسا ہے؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں اگر پہلی تقسیم خلافِ شرع کی گئی ہو تو شریعت کے مطابق دوسری مرتبہ تقسیمِ وراثت ضروری ہوگی،  تاہم اگر پہلی تقسیم شریعت کے مطابق کی گئی ہو تو اس صورت میں دوسری مرتبہ تقسیم ضروری نہیں۔  اسی طرح اگر کوئی وارث ترکہ میں سے کچھ مال یا سامان وغیرہ لے کر اپنی رضامندی سے دست بردار ہوچکاہو تو اس کا دوبارہ تقسیم کا مطالبہ درست نہیں ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008201205

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے