بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 17 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

چار ماہ کا حمل ضائع کرنے کا حکم


سوال

ایک عورت جس نے اپنی منگیتر کی ساتھ زنا کیا،  اب وہ مرد اس عورت کے ساتھ نکاح کرنے سےانکار کر رہا  ہے، جب کہ وہ عورت اس مرد سے 4 ماہ سے حاملہ ہے ، اس عورت کےلیے کیا حکم ہے ، وہ اپنا حمل گرانا چاہتی ہے؟

جواب

 دونوں پر حرام کے ارتکاب کی وجہ سے توبہ واستغٖفارلازم ہے، اورجب تک نکاح نہ ہو  کوئی تعلق رکھنا ناجائز ہے، شریعت میں نکاح سے پہلے خواہ منگنی ہوچکی ہو ملاقات اور رابطہ رکھنا ممنوع ہے، اور اسی طرح کے مفاسد کی وجہ سے شریعت نے برابری کا رشتہ ملنے کے بعد نکاح میں تاخیر کو سخت ناپسند کیا ہے۔ بہرحال اب چار ماہ کا حمل ضائع کرنا بھی حرام ہے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909201356

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے