بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

11 شعبان 1441ھ- 05 اپریل 2020 ء

دارالافتاء

 

پہلی رکعت میں سورۂ ناس پڑھ لی


سوال

اگر چار رکعت والی نماز میں پہلی رکعت میں سورۃ الفاتحہ کے بعد سورہ ناس پڑھ لے تو باقی رکعات  میں سورۃ الفاتحہ کے بعد کون سی سورت پڑھےگا؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں اگر فرض نماز ہو تو دوسری رکعت میں بھی سورۂ  ناس ہی پڑھے۔ اور اگر سنن و نوافل میں سے کوئی نماز ہو تو  قرآنِ پاک کے کسی بھی حصے سے بقیہ رکعتوں میں پڑھ سکتا ہے، البتہ افضل یہ ہے کہ پہلی رکعت میں بھول کر سورۃ الناس پڑھ لی ہو تو بقیہ تمام رکعتوں میں سورۃ الناس ہی پڑھ لینی چاہیے۔ یہ فرق اس لیے ہے کہ قرآن کی ترتیب کا خیال رکھنا صرف فرائض میں ضروری ہے، سنن ونوافل میں نہیں۔

الدر المختار شرح تنوير الأبصار في فقه مذهب الإمام أبي حنيفة (1/ 546.547):
"وأن يقرأ منكوساً ... ولا يكره في النفل شيء من ذلك".

الجوهرة النيرة على مختصر القدوري (1/ 58):
"وإذا قرأ في الأولى ﴿قل أعوذ برب الناس﴾ يقرأ في الثانية ﴿قل أعوذ برب الناس﴾ أيضاً".
 فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144107200349

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے