بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 شوال 1441ھ- 05 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

وراثت کی تقسیم میں تاخیر سے میت کو قبر میں تکلیف ہوتی ہے یا نہیں؟


سوال

وراثت تقسیم کرنے میں تاخیر کرنے سے (عمداً اور سہواً) میت کو قبر میں کوئی تکلیف ہوتی ہے؟

جواب

وراثت کی تقسیم میت کے ورثاء کا حق ہے اور میت کے وصی یا جس وارث کے پاس میت کے ترکہ کا اختیار ہو اس کی ذمہ داری ہے کہ وہ جلد سے جلد وراثت کی تقسیم کر کے تمام ورثاء کو ان کا حق دے دے، وراثت کی تقسیم میت کی ذمہ داری نہیں ہے؛ اس لیے تقسیم میں تاخیر ہونے سے میت کو قبر میں کوئی تکلیف نہیں پہنچتی ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144104200377

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں