بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 14 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

نجاست خشک ہونے کے بعد اس پر تر پاؤں کا لگنا


سوال

اگر قالین پر بچہ پیشاب یا پاخانہ کرے اور خشک ہوجائے تو اگر اس پر تر پاؤں لگ جائے تو کیا اس سے پاؤں ناپاک ہوجائیں گے؟

جواب

قالین کے خشک ہوجانے کے بعد اس پر ترپاؤں لگنے سے پاؤں ناپاک نہیں ہوں گے جب تک کہ نجاست کا اثر پاؤں میں  ظاہر نہ ہو۔ البتہ اگر نجاست کی جگہ متعین ہو اور گیلا پاؤں وہاں لگنے کے بعد کوئی احتیاطاً دھولے تو  بہتر ہے، لیکن یہ حکم از روئے فتویٰ نہیں ہے۔ فتاوی شامی میں ہے:

"(قوله: مشى في حمام ونحوه) أي كما لو مشى على ألواح مشرعة بعد مشي من برجله قذر لايحكم بنجاسة رجله ما لم يعلم أنه وضع رجله على موضعه؛ للضرورة. 

 فتح. وفيه عن التنجيس: مشى في طين أو أصابة ولم يغسله وصلى تجزيه ما لم يكن فيه أثر النجاسة؛ لأنه المانع إلا أن يحتاط، أما في الحكم فلايجب". (1/350)فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144010200640

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے