بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 14 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

ناپاکی کی حالت میں بچہ کو دودھ پلانا


سوال

جماع کرنے کے بعد عورت کا ناپاکی کی حالت میں بچے کو دودھ پلانا کیسا ہے؟  اس کا بچے کی صحت پر کیا برا ا ثر پڑتاہے؟

جواب

پاکی ایمان کا حصہ ہے؛ لہذا جنابت کے بعد جلد از جلد پاک ہوجانا چاہیے، بلاوجہ تاخیر نہیں کرنی چاہیے۔ غسلِ جنابت میں اتنی تاخیر کرنا کہ نماز قضا ہوجائے گناہ ہے۔  البتہ بچہ کو دودھ پلانے کے لیے ماں کا پاک ہونا ضروری نہیں ہے؛ لہٰذا بچہ رورہاہو تو  جنابت کی حالت میں دودھ پلاسکتی ہے، تاہم دودھ پلاتے وقت ماں کو ذکر و اذکار میں مشغول رہنا بہتر ہے۔

باقی بچے کی صحت پر اس کا کیا اثر پڑتاہے؟  یہ اس موضوع کے ماہرین (متدین اہلِ طب)  بتاسکتے ہیں۔  فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144102200301

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے