بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

6 شعبان 1441ھ- 31 مارچ 2020 ء

دارالافتاء

 

موسیٰ کلیم نام رکھنا


سوال

موسیٰ کلیم نام رکھنا کیسا ہے؟ نیز موسیٰ کے معنی کیا ہیں؟

جواب

موسیٰ : جلیل القدر نبی کا نام ہے، اور انبیاء کے نام پر نام رکھنے پر معنی ملحوظ نہیں ہوتا، بلکہ اس نام کے اچھے اور درست ہونے کے لیے صرف اتنا کافی ہے وہ کسی نبی کا نام ہے،   اور کلیم  کے معنی : ”بات کرنے والا “ ہے۔ لہذا ’’موسیٰ کلیم‘‘ نام رکھنا جائز ہے، ’’موسیٰ کلیم اللہ‘‘  مناسب نہیں ہوگا۔

تاج العروس (40/ 199۔201):
"ومُوسَى: اسْمُ نَبِيَ مِن أَنْبياءِ اللهاِ، صلى الله عَلَيْهِ وعَلى نبيِّنا وَسلم؛ والنِّسْبَةُ {مُوسِيُّ} ومُوسَوِيُّ. وَقد ذُكِرَ فِي عِيسَى". 
 فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144107200979

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے