بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

8 شوال 1441ھ- 31 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

مسلمان کے ہوٹل میں غیر مسلم گوشت بناتا ہو تو اس ہوٹل میں کھانے کا حکم


سوال

اگر کسی مسلمان کے ہوٹل میں غیر مسلم گوشت بناتاہے تو وہ گوشت کھانا حلال ہے یا حرام؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں اگرمذکورہ ہوٹل میں صرف  گوشت پکانے والا، یا گوشت کے ٹکرے وغیرہ کرنے والا غیر مسلم ہے اور جانور  مسلمان نے ہی ذبح کیا ہو یا حلال طریقہ سے ذبح کیے ہوئے جانور کا گوشت خرید کر پکایا جاتا ہو ، اور کھانے میں ناپاک اجزا شامل نہ ہوں تو  اس ہوٹل میں کھانا کھانا جائز ہے، اگر گوشت بنانے سے مراد یہ ہو کہ جانور غیر مسلم ہی ذبح کرتا ہے تو  ایسی صورت میں یہ جانور حلال نہیں ہوگا، اور مذکورہ ہوٹل میں کھانا کھانا جائز نہیں ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144105200360

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے