بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

10 ربیع الثانی 1441ھ- 08 دسمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

ماں، دو بیٹے اور سات بیٹیوں میں وراثت کی تقسیم


سوال

رقم کی تقسیم پوچھنا چاہتا ہوں کہ کتنی ہوگی سب میں ؟  ٹوٹل رقم ایک کروڑ اکہتر لاکھ۔

وارث:  ایک ماں۔ 7 بیٹیاں ۔ 2 بیٹے۔ اور کوئی وارث یا قرضہ کچھ نہیں،  خالص رقم کی ان میں تقسیم کرنی ہے،  رقم کتنی کتنی آئے گی؟ 

جواب

صورتِ مسئولہ  میں اگر ماں سے مراد مرحوم کی ماں ہے تو ایسی صورت میں مرحوم کی ماں کو  2850000 روپے، مرحوم کے ہر ایک بیٹے کو 2590909 روپے اور ہر ایک بیٹی کو 1295454 روپے ملیں گے۔

اور اگر ماں سے مراد مرحوم کی بیوہ ہے تو اس صورت میں مرحوم کی بیوہ کو 2137500  روپے، ہر ایک بیٹے کو 2720454 روپے اور ہر ایک بیٹی کو 1360227 روپے ملیں گے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144004201396

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے