بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 شوال 1441ھ- 28 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

قرض دار شخص کے ہاتھ نصاب کے بقدر رقم نہ ہو تو کیا اس پر قربانی واجب ہے؟


سوال

ایک شخص کے پاس قربانی کے لیے نصاب سے زائد مال موجود ہے،  یہ شخص یہ مال کسی شخص کو قرض پر دے دیتا ہے، اب اس کے ہاتھ میں فی الوقت نصاب کے بقدر رقم نہیں ہے، کیا اس شخص پر قربانی واجب ہوگی؟

 

 

جواب

 مذکورہ شخص پر قربانی واجب ہوگی، کیوں کہ قرض پر دیا ہوا مال مذکورہ شخص کی ملکیت ہے، اور قربانی واجب ہونے کے لیے نصاب کا مالک ہونا ضروری ہے، ہاتھ میں نصاب کے بقدرمال کا ہوناضروری نہیں ہے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143711200017

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے