بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 شوال 1441ھ- 05 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

قربانی کے بدکے ہوئے جانور کو پکڑنے کی کوشش میں اس کا سینگ ٹوٹ جائے تو کیا حکم ہے؟


سوال

اگر قربانی کا جانور بھاگ جائے اور اس کو پکڑنے کی کوشش میں اس کا سینگ ٹوٹ جائے تو آیا اس کی قربانی جائز ہوگی یا نہیں ؟

جواب

اگر ذبح کی تیاری کی درمیان جانور بھاگ جائے اور اس کو پکڑنے کی کوشش میں اس کا سینگ ٹوٹ جائے  یا کوئی اور عیب پیدا ہوجائے  اور اس کو ذبح کردیا جائے تو اس جانور کی قربانی درست ہے۔

اور اگر ذبح کرنے کے علاوہ ویسے ہی جانور بھاگ جائے اور  اس کو پکڑنے کی کوشش میں اس کا سینگ بالکل جڑ سے اکھڑ جائے اور چوٹ کا اثر دماغ تک پہنچ جائے تو اس کی قربانی درست نہیں ہے، اور اگر سینگ جڑ سے نہ اکھڑے، بلکہ اوپر سے ٹوٹ جائے تو اس کی قربانی درست ہوگی۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144012200487

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں