بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

13 صفر 1442ھ- 01 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

قربانی کی کھال مدرسہ کو دینے کا حکم


سوال

کیاقربانی کی چرم مدرسہ کو دینا جائزہے?

جواب

قربانی کی چرم ( کھال) مدارس کے مستحقِ زکاۃ طلبہ کے لیے مدارس کو دینا نہ صرف جائز ، بلکہ افضل ہے، کیوں کہ دینی تعلیم حاصل کرنے والوں پر خرچ کرنا ان کی تعلیم میں تعاون ہے، جس پر امید ہے کہ اللہ تعالیٰ ان کے تمام خیر کے کاموں کے اجر و ثواب میں خرچ کرنے والوں کو بھی حصہ عطا فرمائیں گے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909201868

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں