بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

9 شوال 1441ھ- 01 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

عورت کا دعوت میں جانا


سوال

آج کل جو شادی کی تقریبات ہو رہی ہیں، جیسے منگنی بارات ولیمہ وغیرہ ان میں اگر کوئی غیر شرعی کام نہ ہو، جیسے: ناچ گانا تصویر سازی اور مخلوط تقریبات، بس مہمانوں کو بلاکر کھانا کھلانا اور رخصت کر دینا تو کیا ایسی تقریبات میں جانا اور وہاں کھانا کھانا جائز ہے؟ کیا کوئی عورت اپنے بہن بھائیوں کی ایسی تقریبات میں شرکت کر سکتی ہے اور وہاں کھانا کھا سکتی ہے؟ 

جواب

اگر تقریب غیر شرعی امور سے خالی ہو، جیساکہ سوال میں مذکور ہے، تو عورت شرعی قیودات کے ساتھ  شرکت کرسکتی ہے اور کھانا کھاسکتی ہے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144103200049

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے