بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

6 شعبان 1441ھ- 31 مارچ 2020 ء

دارالافتاء

 

عقیقہ کا ساتواں دن جمعہ ہونے کی صورت میں جمعہ کی رات عقیقہ کرنا


سوال

اگرعقیقہ کاوقت یعنی ساتواں دن(مثلاً)جمعہ کومکمل ہوتاہو تو کیارات کو یعنی جمعہ کی رات کوبکری ذبح کرناجائزہے؟

جواب

حج کے علاوہ دیگر اَحکامِ شرع میں رات کا تعلق آنے والے دن کے ساتھ ہوتا ہے،  یعنی پہلے رات ہوتی ہے اور اس کے بعد دن آتا ہے، لہذا جمعرات کی مغرب کے بعد جو رات ہے وہ شبِ جمعہ ہے،  اس لیے اگر بچہ کی ولادت ہفتہ کے دن ہوئی ہو تو اس کا پیدائش کے حساب سے ساتواں دن جمعہ ہوگا، تو جمعہ کی رات یعنی جو جمعرات کے دن کے بعد ہوتی ہے اس میں عقیقہ کرلیا جائے تو ساتویں دن کی فضیلت حاصل ہوجائے گی۔ اگر آپ کی مراد  جمعہ کی رات سے جمعہ کے دن کے بعد آنے والی رات ہو تو وہ  ہفتہ کی رات شمار ہوگی۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144107200365

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے