بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 شعبان 1441ھ- 09 اپریل 2020 ء

دارالافتاء

 

صاحبِ حیثیت شخص کا بچوں کے لیے لنڈا کے کھلونے خریدنا


سوال

کیا لُنڈے سے کھلونے خرید کر بچوں کو کھیلنے کے لیے دے سکتے ہیں، باوجود  اس کے کہ ہم صاحبِ حیثیت ہیں اور نئے خرید سکتے ہیں؟

جواب

صاحبِ حیثیت اور تنگ دست دونوں  کے لیے نئی اور پرانی جائز اشیاء کی خرید وفروخت جائز ہے، لہذا آپ کے لیے اپنے بچوں کے لنڈا کے کھلونے لینا جائز ہے، البتہ اس میں اس بات کا خیال رکھیں وہ کسی جان دار کی تصاویر یا کارٹون پر مشتمل نہ ہو۔ گڑیا، کارٹون اور بھالو وغیرہ خریدنا اور بچوں کو دینا شرعاً درست نہیں ہے۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144104200699

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے