بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

14 ذو الحجة 1441ھ- 05 اگست 2020 ء

دارالافتاء

 

صابرہ نام رکھنا


سوال

’’صابرہ‘‘ نام رکھنا قرآن و حدیث کی روشنی کیسا ہے؟ میری والدہ محترمہ جو اس فانی دنیا سے رحلت فرما گئی ہیں، ان کی  محبت میں میں نے اپنی بیٹی کا نام اپنی والدہ محترمہ کے نام پہ رکھا ہے، اب کہیں  سے پتا چلا کہ یہ نام ٹھیک نہیں۔ راہ نمائی فرما کر عنداللہ ماجور ہوں!

جواب

اس نام کا معنی ہے: ’’صبر کرنے والی‘‘۔ یہ نام رکھنا درست ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144106200223

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں