بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

6 شوال 1441ھ- 29 مئی 2020 ء

دارالافتاء

 

شوہر سے علیحدہ رہنے کی صورت میں طلاق کے بعد عدت کا حکم


سوال

عورت گزشتہ ایک سال سے اپنی ماں کے گھر پر ہے، مگر ابھی اس کو شوہر نے طلاق دے دی ہے، تو کیا اب یہ عورت عدت گزارےگی؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں جس وقت شوہر نے طلاق دی اس وقت سے مطلقہ عورت پر عدت گزارنا لازم ہے، اور حمل نہ ہونے کی صورت میں مطلقہ عورت کی عدت مکمل تین ماہواریاں ہے،  طلاق سے پہلے شوہر سےعلیحدہ  رہنے  کی وجہ سے عدت کا حکم ختم نہیں ہوتا، بلکہ طلاق کے وقت سے عدت کی ابتدا ہوتی ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144107200262

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے