بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

10 شوال 1441ھ- 02 جون 2020 ء

دارالافتاء

 

سود خور سے قرض بلا سود لینا


سوال

 ایک ایسا شخص جو کہ سود خور ہو اور اس کو چھپاتا بھی نہ ہو تو ایسے شخص سے قرض بلاسود لینا جائز ہے یا نہیں؟

جواب

حرام آمدن والے شخص سے قرض لینے کی بجائے حلال آمدن والے شخص سے قرض لیا جائے،تاہم اگر کوئی حلال آمدن والا قرض دینے پر تیار نہ ہو تو بامر مجبوری مذکورہ شخص سے غیر سودی قرض لینے کی گنجائش ہوگی۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909200782

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے