بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 17 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

سوتیلی والدہ کا حق


سوال

 اگر ایک شخص دوسری شادی کرتا ہے تو اس شخص کی پہلی بیوی جس کو وہ طلاق دے چکا ہو اس کی اولاد پر دوسری بیوی کے کیا حقوق ہیں؟ کیا وہ بیٹے دوسری عورت کے لیےمحرم ہیں؟

جواب

مذکورہ شخص کے   پہلی بیوی سے پیدا شدہ بیٹے، اس کی دوسری بیوی  [ اپنی سوتیلی والدہ ]کے لیے محرم ہیں۔قرآن کریم میں سوتیلی ماؤں کی بھی حرمت اور ان کی تعظیم و توقیر بیان کی گئی ہے،لہذا سوتیلی والدہ کے ساتھ بھی حسن سلوک کرناچاہیے اور عزت واحترام سے پیش آناچاہیے؛  اس لیے کہ وہ والد کے نکاح میں ہے۔[النساء:22-فتاوی محمودیہ 24/346،ط:فاروقیہ] فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143902200039

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے