بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

25 جُمادى الأولى 1441ھ- 21 جنوری 2020 ء

دارالافتاء

 

سمت قبلہ سے 20ڈگری انحراف ہو تو نماز کا حکم


سوال

ہم ایک ایسی مسجد میں نماز پڑھتے ہیں، جس کا قبلہ تقریباﹰ 15 سے 20 ڈگری آؤٹ ہے،جب کہ قریب ہی درست قبلہ سمت کی مسجد بھی موجود ہے تو کیا ایسی صورت میں ہماری نماز درست ہوگی؟جب کہ ہمیں معلوم بھی ہو کہ یہ مسجد درست قبلہ سمت میں نہیں بنی؟

جواب

اولاً کوشش کی جائے کہ مسجد کارخ جس قدر سمت قبلہ سے ہٹ کر ہے اسے درست کردیاجائے، ورنہ کم از کم نماز کے وقت صفیں درست سمت میں لگائی جائیں۔ اور اگر قبلہ کی مکمل درستگی ممکن نہ ہوتو15سے 20ڈگری انحراف کے باوجود نماز ادا ہوجائے گی۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144004200202

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے