بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

12 ذو القعدة 1441ھ- 04 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

سسرال میں نماز قصر ہوگی یا اتمام کرنا ہوگا؟


سوال

 سسرال میں نماز قصر پڑھیں گے یا پوری پڑھیں گے؟

جواب

اگر سسرال مسافتِ شرعی کی دوری پر ہو، اور بیوی مستقل طور پر وہاں قیام پذیر نہ ہو اور وہاں پندرہ دن سے کم قیام کی نیت ہو تو نماز قصر کرے، (یعنی چار رکعت والی نماز کودور رکعت پڑھے)، البتہ اگر مقیم امام کی اقتدا کی تو امام کی متابعت کی وجہ سے پوری نماز  پڑھنی ہوگی ۔

لیکن اگر وہاں پندرہ دن یااس سے زیادہ قیام کی نیت ہے یا بیوی مستقل طور پر وہیں رہتی ہے، یا سسرال مسافتِ شرعی کی دوری پر نہیں ہےتو نماز پوری پڑھے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144001200899

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں