بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

12 ربیع الاول 1442ھ- 30 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

روزے میں کھانا یا پانی حلق تک آجائے


سوال

اگر روزے میں کھانا یا پانی حلق تک آجائے تو اس سے روزہ فاسد ہوجاتا ہے؟ جب ایسا ہو تو کیا کریں اندر لے جائیں یا تھوک دیں؟

جواب

روزہ میں کھانا یاپانی خود بخود حلق تک آجائے تو روزہ فاسد نہیں ہوتا، اگر کھانایا پانی منہ تک آجائے تو اس کو باہر تھوک دیں اندر نہ لیں ، اگر جان بوجھ کر اندر نگل لیا تو روزہ فاسد ہوگا اور اس روزہ کی قضا لازم ہوگی، اگر خود بخود غیر ارادی طور پر اندر چلاگیا تو روزہ فاسد نہیں ہوگا۔  فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143909200116

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں