بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

28 جمادى الاخرى 1441ھ- 23 فروری 2020 ء

دارالافتاء

 

دبیر نام رکھنا کیسا ہے؟


سوال

’’دبیر‘‘  نام رکھنا کیسا ہے؟  اور اس کے معنی کیا ہیں؟

جواب

لغتِ عرب میں ’’دَبِیْر‘‘  کے کئی معانی ہو سکتے ہیں، اصلاً  پیچھے چھوڑی جانے والی چیز کو  دبیر کہا جاتا ہے،  اس لفظ کا ایک معنی اللہ تعالی کی نا فرمانی کرنے کے ہیں، کان کے اوپر والے حصے کے لیے بھی دبیر کا لفظ استعمال کیا جاتا ہے۔

بہتر یہ ہے کہ یہ نام نہ رکھا جائے، بلکہ اس کی بجائے انبیاءِ کرام علیہم السلام یا صحابہ رضوان اللہ علیہم اجمعین کے اسماءِ گرامی میں سے کوئی نام رکھ لیا جائے، ایسے نام رکھنا باعثِ برکت ہے۔

لسان العرب (11/ 539):
"وما يعرف قبيلًا من دبير: يريد القبل والدبر، وقيل: القبيل طاعة الرب تعالى، والدبير معصيته، وقيل: معناه لايعرف الأمر مقبلًا ولا مدبرًا، وقيل: هو ما أقبلت به المرأة من غزلها حين تفتله وأدبرت، وقيل: القبيل من الفتل ما أقبل به على الصدر والدبير ما أدبر به عنه، وقيل: القبيل باطن الفتل والدبير ظاهره، وقيل: القبيل والدبير في فتل الحبل، فالقبيل الفتل الأول الذي عليه العامة، والدبير الفتل الآخر، وبعضهم يقول: القبيل في قوى الحبل كل قوة على قوة، وجهها الداخل قبيل والخارج دبير، وقيل: القبيل ما أقبل به الفاتل إلى حقوه، والدبير ما أدبر به الفاتل إلى ركبته، وقال المفضل: القبيل فوز القدح في القمار، والدبير خيبة القدح، وقال جماعة من الأعراب: القبيل أن يكون رأس ضمن النعل إلى الإبهام، والدبير أن يكون رأس الضمن إلى الخنصر، المحكم، وقيل: القبيل أسفل الأذن والدبير أعلاها، وقيل: القبيل القطن والدبير الكتان، وقيل: ما يعرف من يقبل عليه".
 فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144105200256

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے