بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

12 ذو القعدة 1441ھ- 04 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

جنازے کی تکبیرات میں ہاتھ اٹھالیے


سوال

جنازہ میں ہر تکبیر پر ہاتھ اٹھا لیے تو کیا حکم ہے؟

جواب

جنازے  کی پہلی تکبیر کے بعد تین تکبیرات میں ہاتھ نہ اٹھانا بہتر  ہے،  اگر اٹھالیے تب بھی نماز ہوجائے گی۔

"وهو سنة قیام له قرار فیه ذکر مسنون فیضع حالة الثناء، وفي القنوت و تکبیرات الجنائز". ( الدر المختارمع الرد)

"فیعتمد في حالة القنوت  و صلاة الجنازة". (الهداية)فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144106200799

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں