بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 14 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

جنابت کی حالت میں اذان کا جواب دینا


سوال

کیا جنابت کی حالت میں اذان کا جواب دے سکتے ہیں؟

جواب

جنابت کی حالت میں صرف قرآنِ مجید کی تلاوت کرنا اسے چھونا اور مسجد میں داخلہ وغیرہ منع ہے، ذکر و اذکار ،درود شریف پڑھنے،قرآنِ کریم کے علاوہ کوئی وظیفہ پڑھنے کی  ممانعت نہیں، لہذا حالتِ جنابت میں اذان کا جواب دیا جا سکتا ہے، البتہ ان اذکار اور اذان کے جواب کے لیے وضو کرنا مستحب ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144004200860

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے