بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

18 ذو القعدة 1441ھ- 10 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

جمعے کی سنتوں کی بعد نفل پڑھنا


سوال

جمعہ کی نماز کے بعد چار رکعت سنت ہیں یا چھ،  اس میں الگ اختلاف ہے،  لیکن ان چار یا چھ کے بعد جو دو رکعت نفل نماز ہے، ان کا ثبوت کہاں سے ہے؟

جواب

جمعہ کی نماز میں کل بارہ رکعتیں ہیں، چار رکعات سنتِ مؤکدہ فرض سے پہلے، دو رکعت فرض، چار رکعت سنتِ مؤکدہ فرض کے بعد اور  اس کے بعد مزید دو  رکعت راجح قول کے مطابق سنتِ غیر مؤکدہ ہیں،  باقی احادیث میں جمعہ کے بعد نفل کی کوئی متعینہ مقدار مذکور نہیں ہے، اس لیے  جمعہ کے ساتھ نفل کا نہ کوئی اختصاص ہے اور نہ نفل کی کوئی تحدید ہے، آدمی کی مرضی ہے جتنی چاہے پڑھے۔فقط واللہ اعلم

جمعے کی نماز کے بعد کی سنتوں کی تفصیل کے لیے درج ذیل لنک پر جامعہ کا فتوی ملاحظہ فرمائیں:

جمعہ کی نماز کے بعد سنتِ مؤکدہ چار ہیں یا چھ ؟ اور پہلے چار رکعت پڑھی جائیں یا دو رکعت؟


فتوی نمبر : 144106200836

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں