بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

15 ذو القعدة 1441ھ- 07 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

جس جگہ تصویر ہو اس مقام پر نماز ادا کرنے کا حکم


سوال

میری دوکان کرایہ کی ہے،  بوہری کی دوکان پر ان کے پیر  کی تصویر لگی ہوئی ہے، جو ہٹ نہیں سکتی، سوال یہ ہے کہ کیا دوکان میں نماز و قرآنِ مجید پڑھ سکتے ہیں؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں مذکورہ دوکان میں قرآنِ مجید کی تلاوت کرنا درست ہوگا،  تاہم مردوں کو فرض نماز جماعت کے ساتھ مسجد میں ادا کرنے کا حکم ہے، کاروبار  کی وجہ سے جماعت ترک کرنا درست نہیں، لہذا فرض نماز مسجد  میں ادا کرنے کا اہتمام کیا جائے،  سنن و نوافل اگر دوکان میں ادا کرنے ہوں تو  مذکورہ تصویر  پر کوئی کپڑا وغیرہ ڈال کر نماز ادا کی جائے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144106200538

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں