بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

22 ذو الحجة 1441ھ- 13 اگست 2020 ء

دارالافتاء

 

بیٹے کا طلاق یافتہ والدہ اور والد کو اپنے ساتھ ایک ہی گھر میں رکھنے کا حکم


سوال

میری والدہ جو کہ ایک ضعیف خاتون ہیں وہ طلاق یافتہ ہیں، وہ چلنے پھرنے سے بالکل قاصر ہیں اور میرے والد بھی میرے ساتھ رہائش پذیر ہیں، اتنے وسائل نہیں ہیں کہ میں الگ الگ گھر رکھ سکوں، اس سلسلہ میں کیا حکم ہے؟

 

جواب

آپ اپنے والد اور والدہ دونوں کو اپنے ساتھ  ایک گھر میں رکھ  سکتے  ہیں، بشرطیکہ دونوں کے درمیان پردہ کا مکمل اہتمام کیا جائے، ان کے کمرے الگ الگ ہوں، اور دونوں کے درمیان خلوت کا موقع نہ آئے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144103200179

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں