بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 11 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

بائع کا نفع کی ضمانت لینا


سوال

میں نے ایک فلیٹ اپنے دوست سے خریدا۔ دوست نے کہا کہ یہ فلیٹ زیرِ تعمیر حالت میں ایک کروڑ میں لے لو۔ جب مکمل ہوگا تو ایک کروڑ دس لاکھ میں بک جائے گا۔ میں نے اس کی بتائی ہوئی قیمت پر اس دوست پر اعتبار کرکے فلیٹ خرید لیا ۔تاہم اس فلیٹ کی قیمت میں کوئی اضافہ نہیں ہوا۔ اب دوست مجھے دس لاکھ کے بجائے پانچ لاکھ اپنی خوشی سے [میرے کسی تقاضے کے بغیر] واپس کررہا ہے۔ کیا یہ پیسے لینا میرے لیےجائز ہے؟

جواب

 آپ کے دوست پر لازم نہیں کہ آپ کو کچھ ادا کرے اور نہ ہی آپ کا اس سے مطالبہ کرنا درست ہے، تاہم اگر وہ دل کی رضامندی سے آپ کو کچھ واپس کرے تو آپ کے لیے لینا جائز ہے۔ فقط واللہ اعلم

 


فتوی نمبر : 144001200875

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے