بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ذو القعدة 1441ھ- 09 جولائی 2020 ء

دارالافتاء

 

ایک سودا ایجنٹ کے واسطے سے کرنے کے بعد دوسرا سودا بلا واسطہ مالک سے کروانا


سوال

اگر زید نے کسی ایجنٹ کے واسطے سے خالد سے زمین خریدی۔ اب اس کے تعلقات خالد سے اچھے ہوگئے۔ اب وہ اپنے کسی عزیز کو ایجنٹ کو لائے بغیر براہِ راست خالد سے زمین دلوانا چاہتا ہے۔ ایسا کرنا کیسا ہے؟

جواب

اگر زید نے ایجنٹ سے براہِ راست سودا نہ کرنے کا وعدہ نہیں کیا تھا تو جائز ہے۔  فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144107201006

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں