بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

2 ربیع الاول 1442ھ- 20 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

ایسے الفاظِ کفریہ جن سے نکاح ٹوٹ جاتا ہے


سوال

وہ کون سے کفریہ الفاظ ہیں، جن سے نکاح ٹوٹ جاتا ہے اور پتا بھی نہیں چلتا؟ 

جواب

ایسے الفاظ جن کے کہنے سے کفر ثابت ہو تا ہے،  کہنے والے پر کافر ہونے کا حکم لگتا ہے اور   جن سے ایمان اور نکاح ختم ہوجاتا ہے، بے شمار ہوسکتے ہیں۔ 

اصولی طور پر یہ سمجھ لیجیے کہ جن الفاظ میں ضروریاتِ دین میں سے کسی بات کا انکار یا اعتراض ہو یا صریح حکمِ الٰہی کو تبدیل کرکے بیان کیا جائے  یا دین کے کسی بھی حکم یا بات کا استہزا و مذاق اڑایا جائے، اللہ تبارک وتعالیٰ کی ذات و صفات میں سے کسی کا انکار، اعتراض، استہزا یا استخفاف ہو، یا کسی نبی علیہ السلام کی توہین و گستاخی یا استخفاف ہو، وغیرہ۔ اس قسم کے الفاظ کہنے سے (العیاذ باللہ) کفر ثابت ہوجاتاہے اور نکاح ٹوٹ جاتا ہے۔  جن الفاظ کے متعلق شبہ ہے ان کی نشان دہی کرکے حکم معلوم کرلیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144106200624

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں