بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 21 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

اموال تجارت کی زکات میں قیمت فروخت کا اعتبار ہے


سوال

کیا اموالِ تجارت میں زکاۃ  قیمت خرید پر دینا لازمی ہے یا قیمت فروخت پر ؟ حوالہ کے ساتھ جواب دیں -

جواب

اموالِ تجارت کی زکات کے حساب میں قیمتِ فروخت کا اعتبار کیا جائے گا،  جیسا کہ '' فتاوی شامی'' میں ہے:

'' و تعتبر القيمة يوم الوجوب، و قالا : يوم الأداء، و في السوائم يوم الأداء إجماعاً، وهو الأصح، ويقوم في البلد الذي المال فيه'' ...الخ ( كتاب الزكاة ٢/ ٢٨٦ ط: سعيد).فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143908200458

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے