بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 15 نومبر 2019 ء

دارالافتاء

 

استاد یا ممتحن کا طلبہ کو زبردستی اپنی لکھی ہوئی کتاب یا رسالہ خریدنے پر مجبور کرنے کا حکم


سوال

امتحان کے وقت ممتحن، امتحان دینے والے طلبہ سے یا درس کے دوران کوئی استاد  پڑھنے والے طلبہ سے سے اپنی لکھی ہوئی کتاب یا رسالہ خریدنے کے لیے زبردستی کرے،  یہاں تک کہ ایسا بھی کہتا ہے کہ جو نہیں خریدے گا اس کا امتحان نہیں لیا جائے گا، تو کیا اس قسم کی زبردستی کرنا شرعاًجائز ہے؟

جواب

ادارے / بورڈ کی طرف سے جو تعلیمی نصاب مقرر ہو، اس کے علاوہ کسی استاذ  یا ممتحن کا ذاتی طور پر  درس یا امتحان کے دوران یا کسی بھی وقت طلبہ کو اپنی لکھی ہوئی کتاب یا رسالہ خریدنے پر مجبور کرناشرعاً جائز نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144103200153

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے