بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

6 ربیع الاول 1442ھ- 24 اکتوبر 2020 ء

دارالافتاء

 

اذان کے بعد درود


سوال

 وہ درود ارسال کر دیں جو اذان کے بعد پڑھنا چاہیے۔

جواب

احادیثِ مبارکہ میں اذان کے بعد مطلقاً درود شریف پڑھنے کا ذکر اور اس کی فضیلت ہے؛  لہذا اذان کے بعد کوئی بھی درود شریف پڑھنا مسنون ہے۔ 

مرقاة المفاتيح شرح مشكاة المصابيح (2 / 558):
"(فقولوا مثل ما يقول) أي: إلا في الحيعلتين لما سيأتي، وإلا في قوله: الصلاة خير من النوم، فإنه يقول: صدقت وبررت وبالحق نطقت، وبررت بكسر الراء الأولى، وقيل بفتحها، أي: صرت ذا بر، أي: خير كثير (ثم صلوا علي) " أي: بعد فراغكم (فإنه) أي: الشأن (من صلى علي صلاةً) أي: واحدةً (صلى الله عليه) أي: أعطاه (بها عشرًا) أي: من الرحمة، وفي رواية: "صلى الله وملائكته عليه بها عشرًا" بل أكثر، كما جاء في روايات كثيرة".
 فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144105201023

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاش

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے نیچے کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔ سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے۔

سوال پوچھیں