بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 23 جولائی 2019 ء

دارالافتاء

 

قبروں پردعا مانگنے کاحکم


سوال

کیا قبروں پہ جا کر دعاء مانگنا جائز ہے؟

جواب

قبروں پر جاکر قبروں سے دعا نہ مانگی جائے تو جائز ہے۔ طریقہ اس کا یہ ہے کہہاتھ اٹھائے بغیر اورفتنے کااندیشہ نہ ہوتوہاتھ اٹھاکردعا کی جائے، ہاتھ اٹھانے کی صورت میں بہتر یہ ہے کہ قبلہ رخ ہوکردعا کی جائے تاکہ صاحبِ قبرسے مانگنے کا گمان نہ ہو۔ اوراگرہاتھ اٹھاکردعا کرنے میں فتنے کا اندیشہ ہوتوہاتھ اٹھاکردعانہ کی جائے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143504200006

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے