بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

12 شوال 1440ھ- 16 جون 2019 ء

دارالافتاء

 

جھوٹا الزام لگا کر کسی کے پیسے غصب کرلیے توکیا کرے؟


سوال

میرا یہ سوال ہے کہ  میں ایک آدمی کے ساتھ کام کرتا تھا، اس کی دوکان میں کیشئیر تھا، اس وقت میرے پاس اپنا پیسا تھا، ایک دن اس نے میرے اوپر جھوٹا الزام لگایا اور میرا پیسا روم سے اٹھا دیا، اور اس کے پاس کوئی ثبوت نہیں، ابھی مجھے  کیا کرنا چاہیے؟ میں مسافر ہوں  ملیشیا سے ۔

جواب

اگر واقعۃً آپ کے پاس اپنی رقم تھی اور آپ کے پاس اس کا ثبوت بھی ہے تو قانونی چارہ جوئی کرکے اپنا حق وصول کریں۔ نیز اللہ تعالیٰ سے مسلسل دعا جاری رکھیں، "حَسْبِيَ اللهُ وَنِعْمَ الْوَکِیْلُ نِعْمَ الْمَوْلیٰ وَنِعْمَ النَّصِیْرُ، لَاحَوْلَ وَلَاقُوَّةَ إِلَّا بِاللّٰهِ الْعَلِيِّ الْعَظِیْمِ" کا کثرت سے ورد کریں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008201460

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے