بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 22 ستمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

گالوں پر موجود بال کو چمٹے سے نوچنے کا حکم


سوال

داڑھی کی جو حد ہے اس کے اوپر یعنی گالوں پر جو بال ہوتے ہیں ان کو کاٹنا تو جائز ہے، سوال یہ ہے کہ کیا ان بالوں کو قینچی یا استرے وغیرہ سے ہٹانے کے بجائے چمٹے وغیرہ سے نوچ سکتے ہیں یا نہیں؟ یعنی چمٹے سے نوچنا جائز ہے یا نہیں؟

 

جواب

رخسار کے زائد بال جو داڑھی کا حصہ نہیں ہیں، انہیں ہٹانے یعنی خط بنوانے کی گنجائش ہے، چاہے قینچی  یا بلیڈ استعمال کیا جائے یا چمٹا سے ہٹایا جائے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144004201237

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے