بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 16 اکتوبر 2019 ء

دارالافتاء

 

کیا شادی شدہ عورت کے لیے کسی اور عورت سے ویکس کرانا جائز ہے؟


سوال

کیا شادی شدہ عورت کے لیےکسی اور عورت سے ویکس کرانا جائز ہے؟ مجھے بلیڈ یا ریزر سے دانے نکل آتے  ہیں اور کریم سے بھی سکن خراب ہو جاتی ہے اور خود ویکس کرنا نہیں آتا!

جواب

ستر چھپانا فرض ہے اور کسی کے سامنے بلا ضرورت ستر کھولنا جائز نہیں ہے، اور ویکس کرانا ایسی ضرورت نہیں کہ اس کے لیے ستر کھولنا جائز ہو جائے؛ لہذا زیرِ ناف بالوں کے ویکس کرانے کی غرض سےکسی خاتون کا دوسری خاتون کے سامنے ستر کھولنا جائز نہیں ہے، چاہے پردہ میں ہی کیوں نہ ہو، چاہے عورت شادی شدہ ہو یا غیر شادی شدہ، اور اگر ویکس کرانے والی عورت کے ستر پر کپڑا ہو اور ویکس کرنے والی عورت بھی اس کا ستر نہ دیکھے تو بھی شرعاً اس کی اجازت نہیں ہوگی؛ اس لیے کہ جیسے بلاضرورتِ شرعیہ دوسرے کا ستر  دیکھنا جائز نہیں ہے، اسی طرح بلاضرورت دوسرے کے ستر کو چھونا بھی جائز نہیں ہے۔

اگر بلیڈ یا ریزر یا کریم استعمال کرنا نقصان دہ ہے تو پاوڈر استعمال کریں یا ویکس کا طریقہ زبانی سمجھ کر خود ویکس کریں۔ اور کوئی صورت نہ ہو تو شوہر کے لیے بیوی کا ویکس کرنے کی اجازت ہوگی، گو، یہ بھی زیادہ بہتر صورت نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144012201153

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے