بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 23 مئی 2019 ء

دارالافتاء

 

کیا بھائی اپنی بہن کو روزے کا فدیہ دے سکتا ہے؟


سوال

کیا بھائی اپنی بہن کو روزے کا فدیہ دے سکتا ہے؟

 

جواب

بہن اگر مستحقِ زکات ہو (اور سید/ہاشمی بھی نہ ہوں) تو اسے بھائی فدیہ دے سکتا ہے، تاہم روزے کا فدیہ ادا کرنا اس شخص پر لازم ہے، جسے ایسی بیماری لاحق ہوگئی ہو جس سے آئندہ شفایاب ہونے کی امید باقی نہ رہی ہو اور روزہ رکھنے کی طاقت نہ بچی ہو، یا اتنا بڑھاپا آگیا ہو کہ روزے کی بالکل طاقت نہ ہو۔ البتہ اگر عارضی بیماری کی وجہ سے فی الحال روزہ رکھنے کی طاقت نہ ہو، تو ایسی صورت میں صحت یاب ہونے کے بعد روزوں کی قضا کرنا ضروری ہے، فدیہ ادا کرنا کافی نہیں۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008200808

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں