بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

19 ذو الحجة 1440ھ- 21 اگست 2019 ء

دارالافتاء

 

پیدائش کے وقت جو بچہ زندہ ہو انتقال کی صورت میں نماز جنازہ ادا کی جائے گی


سوال

ایک بچہ پیدا ہونے کے بعد جس کی عمر 4 ماہ کی ہو  مرجائے، تو کیا اس کا نماز جنازہ پڑھا جائے گا اور جس طرح میت کے لیے 3 دن بیٹھتے ہیں ، کیا اس بچے کے لیے  بھی اس طرح بیٹھنا ضروری ہے ؟

جواب

جو بجہ زندہ پیدا ہوا ہو  اس کی موت کی صورت میں اس پر جنازہ کی نماز پڑھی جائے گی؛ لہذا صورت مسئولہ میں مذکورہ بچہ پر بھی نماز جنازہ ادا کی جائے گی۔  نیز  تین دن تک تعزیت کی جا سکتی ہے، مگر اس کے لیے حلقہ لگاکر بیٹھنا ضروری نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144001200103

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے