بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 21 ستمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

قربانی کے جانور میں عقیقہ کا حصہ ڈالنا


سوال

بیٹی کا عقیقہ نہیں کر سکا، قربانی میں اس کے  نام کا حصہ ڈال دیا،کیا سنت ادا ہوگئی؟

جواب

بچے کی پیدائش کے ساتویں دن عقیقہ کرنامستحب ہے،اگر ساتویں دن نہ ہوسکے تو چودہویں دن ورنہ اکیسویں دن ۔(ترمذی1/78،ط:سعید)اکیسویں دن کے بعد بھی عقیقہ کرسکتے ہیں۔ البتہ تاخیر کرنے کی صورت میں ایک قول کے مطابق استحباب کا درجہ باقی نہیں رہتا۔اور قربانی کے جانور میں عقیقہ کی نیت سے حصہ ڈالنے سے عقیقہ اداہوجائے گا۔فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 143908200168

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے