بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 17 اکتوبر 2019 ء

دارالافتاء

 

غلبہ شہوت یا جسم کے بوجھ کی وجہ سے مشت زنی (masterbation) کرنے کا حکم


سوال

میں نے کسی کا بیان سنا ہے جس میں انہوں نے کہا کہ غلبہ شہوت کی وجہ سے یا جسم کا بوجھ ہلکا کرنے کے لیے مشت زنی کرنا جائز ہے اور یہ بھی کہ اس کی نفی میں کوئی صحیح حدیث وارد نہیں ہوئی۔ جب کہ  حدیث میں آتاہے، "ناکح الید ملعون"؟  مسئلہ  مذکورہ کی وضاحت دلائل کے ساتھ فرما دیں!

جواب

مشت زنی کسی حالت میں بھی جائز نہیں ہے؛ غلبہ شہوت کی وجہ سے یا جسم ہلکا کرنے کے لیے  بھی مشت زنی ناجائز ہے۔  اور حدیث میں اس عمل کے مرتکب پر لعنت کی گئی ہے۔ دلائل اور تفصیل کے لیے درج ذیل لنک ملاحظہ کیجیے:

مشت زنی کی حرمت کی دلیل

فقط واللہ اعلم

 


فتوی نمبر : 144012201246

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے