بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

- 19 ستمبر 2019 ء

دارالافتاء

 

عورت کے لیے ایامِ مخصوصہ کے شرعی احکام کا بیان


سوال

 عورت کے لیے مخصوص ایام میں شرعی حکم کیا ہے؟

جواب

عورت کے لیے مخصوص ایام میں شرعی حکم یہ ہے کہ وہ ان ایام میں نماز نہیں پڑھے اور روزہ بھی نہیں رکھے گی، البتہ ایام گزرنے کے بعد روزوں  کی قضا کرنی ہوگی، لیکن ان ایام کی نماز کی قضا نہیں ہے۔ اس کے علاوہ قرآنِ پاک کی تلاوت اور قرآنِ پاک کو چھونا بھی عورت کے لیے ایامِ مخصوصہ میں جائز نہیں ہے۔  اسی طرح ایامِ مخصوصہ کے دوران شوہر کے ساتھ وظیفہ زوجیت ادا کرنا  بھی جائز نہیں ہے۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008200436

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے