بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

5 ربیع الثانی 1440ھ- 13 دسمبر 2018 ء

دارالافتاء

 

عورت کا دوسری عورت سے زیرِ ناف بال صاف کروانا


سوال

کیا خواتین کا بیوٹی پارلر جا کرخواتین سے  ناف سے نیچے کے بال صاف کروانا جائز ہے؟

جواب

عورت کے لیے ناف سے لے کر  گھٹنوں کے نیچے تک  کاحصہ کسی دوسری عورت کے سامنے کھولنا  جائز نہیں  ہے۔لہذا خواتین کا بیوٹی پارلر جاکر زیرِِِ ناف بال کسی دوسری عورت سے صاف کروانا ناجائز ہے۔ فتاوی شامی میں ہے:

’’ ( وتنظر المرأة المسلمة من المرأة كالرجل من الرجل )، وقيل: كالرجل لمحرمه، والأول أصح. سراج. ( وكذا ) تنظر المرأة ( من الرجل ) كنظر الرجل للرجل ( إن أمنت شهوتها فلو لم تأمن أو خافت أو شكت حرم استحساناً كالرجل هو الصحيح في الفصلين. تاترخانية معزياً للمضمرات. ( والذمية كالرجل الأجنبي في الأصح، فلاتنظر إلى بدن المسلمة ) مجتبى ( وكل عضو لا يجوز النظر إليه قبل الانفصال لا يجوز بعده) ولو بعد الموت كشعر عانة وشعر رأسها وعظم ذراع حرة ميتة وساقها وقلامة ظفر رجلها دون يدها‘‘. (6/371) فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144001200767


تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں