بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

17 ذو الحجة 1440ھ- 19 اگست 2019 ء

دارالافتاء

 

شوہر کی اقتدا میں بیوی کا فرض نماز ادا کرنا


سوال

شوہر کی اقتدا میں بیوی فرض نماز ادا کر سکتی ہے ؟

جواب

بیوی اپنے شوہر کی اقتدا میں فرض نماز ادا کرسکتی ہے، تاہم ایسی صورت میں بیوی کا اپنے شوہر سے پیچھے کھڑے ہونا شرعاً ضروری ہے۔

واضح رہے کہ مرد کے لیے شرعی عذر کے بغیر مسجد کی جماعت سے نماز چھوڑنا گناہ ہے، احادیث میں اس پر وعیدیں آئی ہیں، لہٰذا بلاعذرِ شرعی گھر میں اس طرح جماعت نہ کرائی جائے۔ البتہ اگر کبھی کسی عذر کی وجہ سے جماعت رہ جائے تو تنہا فرض نماز ادا کرنے سے بہتر ہے کہ گھروالوں کے ساتھ جماعت سے نماز ادا کرلی جائے، نبی کریم ﷺ ایک مرتبہ دو فریقین کے درمیان صلح کے لیے تشریف لے گئے، جب واپس تشریف لائے تو مسجدِ نبوی میں جماعت ہوچکی تھی، آپ ﷺ نے گھروالوں کو جمع کرکے گھر میں جماعت سے نماز ادا فرمائی۔ فقط واللہ اعلم


فتوی نمبر : 144008201005

دارالافتاء : جامعہ علوم اسلامیہ علامہ محمد یوسف بنوری ٹاؤن



تلاشں

کتب و ابواب

سوال پوچھیں

اگر آپ کا مطلوبہ سوال موجود نہیں تو اپنا سوال پوچھنے کے لیے یہاں کلک کریں، سوال بھیجنے کے بعد جواب کا انتظار کریں۔سوالات کی کثرت کی وجہ سے کبھی جواب دینے میں پندرہ بیس دن کا وقت بھی لگ جاتا ہے

سوال پوچھیں

ہماری ایپلی کیشن ڈاؤن لوڈ کرنے کے لئے